وزیر اعظم کو تنقید کا نشانہ بنانے پر جواد احمد کو خطاب سے روک دیا گیا

معروف گلوکار اور ’برابری پارٹی پاکستان‘ (بی پی پی) کے چیئرمین جواد احمد کو خطاب کے دوران وزیر اعظم عمران خان کو تنقید کا نشانہ بنانے کی وجہ سے تقریر کرنے سے روک دیا گیا۔

جواد احمد نے فیصل آرٹ کونسل میں ہونے والے ’سوشل میڈیا‘ سیمینار کے دوران وزیر اعظم عمران خان اور سابق وزیر اعظم نواز شریف کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

تاہم گلوکار کی جانب سے خطاب کے دوران وزیر اعظم عمران خان کو تنقید کا نشانہ بنائے جاتے وقت تقریب منعقد کرنے والے ایک منتظم نے ان کا اسپیکر بند کردیا۔

ڈان اخبار کے مطابق فیصل آباد آرٹ کونسل میں ہونے والی تقریب میں جواد احمد سمیت دیگر شخصیات کو سوشل میڈیا اور سیاست پر بات کرنے کے لیے مدعو کیا گیا تھا۔
جواد احمد نے اپنے خطاب کے دوران حالیہ اور سابقہ وفاقی حکومتوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ دونوں پارٹیاں عوام سے مخلص نہیں۔
رپورٹ کے مطابق گلوکار اور بی پی پی کے چیئرمین نے اپنے خطاب میں سابق وزیر اعظم نواز شریف اور عمران خان کو ایک ہی سکے کے 2 رخ قرار دیا اور کہا کہ دونوں ایک دوسرے کی کرپشن پر باتیں کرتے رہتے ہیں۔
انہوں نے جمہوری حکومتوں کے مارشل لا سے بھی بدتر قرار دیا۔
جواد احمد کی تقریر کے دوران ایک منتظم نے آکر ان کا مائیک بند کردیا، جس کے بعد گلوکار خطاب چھوڑ کر اپنی نشت پر جاکر بیٹھے۔

بعد ازاں جواد احمد سیمینار چھوڑ کر چلے گئے۔

It's only fair to share...Email this to someoneBuffer this pageDigg thisShare on FacebookShare on Google+Tweet about this on TwitterShare on LinkedInShare on RedditPin on Pinterest

Comments

comments

اپنا تبصرہ بھیجیں